دو بندوں کالین دین انتہائی نقصان دہ ہے

دو بندوں کالین دین انتہائی نقصان دہ ہے
سالا بہنوئی اورسسر داماد کی ایک کامیاب تاجر نے اپنے بیٹے کو نصیحت کی کہ ”بیٹا! زندگی میں دونوں ہاتھوں سے گند کھا لینا، دنیا کا بُرےسے بُرا کام کر لینا، اپنی تجارت میں نقصان کر لینا، اپنا سب کچھ تباہ و برباد کر لینا لیکن کبھی اپنے سالے اور بہنوئی سے، سسراور داماد سے تجارت میں شراکت داری نہیں کرنا“۔۔۔
کسی بھی کاروبار یا معاملات میں کبھی سالا بہنوئی اور داماد سسر کی پارٹنر شپ نہیں ہونی چاہئے کیوں کہ یہ دو رشتے انتہائی نازک ہوتے ہیں۔۔۔ اور سب سے بڑی بات یہ ہےکہ ان دونوں رشتوں کے درمیان عورت رگڑی جاتی ہے۔۔۔

سالا، بہنوئی ، داما، سسرکے رشتے میں بہن ، بیٹی اور بیوی کی حیثیت سے عورت دونوں اطراف سے باتیں سنتی ہے۔۔۔ اگر وہ شوہر کی طرف داری کرے تو بھائی اور والد ناراض اور اگر وہ بھائی یا والد کی طرف داری کرے تو شوہر دشمنِ جان بن جاتا ہے۔

دو بندوں کالین دین انتہائی نقصان دہ ہےبہت سے کم ظرف لوگوں کا اور کسی پر بس چلے یا نہ چلے بیوی پر ضرور چلتا ہے، وہ بچاری ہمیشہ عتاب کا شکار رہتی ہے۔۔۔ بھائی اور والد کی وجہ سے شوہر عمر بھر بیوی کوطعنے دیتا ہے مارتا پیٹتا ہے اور ہمیشہ زلیل و رسوا کرتا ہے۔۔۔

سمجھدار اور کامیاب لوگ ہمیشہ اپنے کاروبار میں رشتہ داروں اور خصوصاً ان قریبی اور گھریلو رشتوں سے خود کو بچاتے ہیں۔۔۔ سسراپنے داما کو الگ سے کاروبار کروالے گا یا بہنوئی، سالا معاملات میں معاونت کر لیں گے لیکن کبھی پارٹنرشپ جیسی غلطی نہیں کرتے۔

دو بندوں کالین دین انتہائی نقصان دہ ہےتجربے سے ثابت ہے کہ ان رشتوں میں باہمی معاملات، تجارت کی وجہ سےاچھے خاصے رشتوں میں زہر گھل جاتا ہے۔۔۔ یہ دو لوگ آپس میں ایک دوسرے کی جان کےدشمن بن جاتے ہیں اور سارا عذاب عورت کو بھگتنا پڑتا ہے۔۔۔
زندگی میں اگر کامیاب ہونا ہے، سکون کی زندگی گزارنی ہے تو کبھی اپنے سالے ، بہنوئی، سسر، داما سے کسی قسم کا کوئی معاملہ نہ کریں۔۔۔ خاص کر بزنس میں پارٹنرشپ کا سوچیں بھی مت ورنہ عمر بھر پچھتاوے اور تکلیف میں گزرے گی۔۔۔ ہمیشہ طعنے سننے پڑیں گے باتیں سننی پڑیں گی اور اپنے آپ کو رشتہ داروں اور علاقے بھر میں بدنامی سہنی پڑے گی۔۔۔ اور اگران رشتوں میں کوئی کم ظرف انسان مل گیا تو سمجھو کہ اپنی عزت کا کباڑہ ہوگا اور ہمیشہ کے لئے پچھتاوہ دامن گیر رہے گا۔۔۔

بہت کم دیکھا گیا ہےان دو اطراف کے رشتوں میں پارٹنرشپ یا معاملات ہونے کے باوجود بھی محبت، احترام اور تعلق برقرار رہے۔۔۔ اکثریت ان دو اطراف میں رشتے کی نزاکت کی وجہ سے بہت معاملات خراب ہوتے ہیں۔۔۔ عورت بچاری دونوں اطراف کی وکالت کر تے کرتے مر جاتی ہے لیکن کبھی دلوں کا میل نہیں اترتا۔

دو بندوں کالین دین انتہائی نقصان دہ ہے

مزید پڑھیں۔

Leave a Comment