انڈیا کے بائیس سالہ جوان نے کمال کر دیا

انڈیا کے بائیس سالہ جوان نے کمال کر دیا،دھلی کی نہروپلیس مارکیٹ میں چارہم عمر دوستوں کے ساتھ ٹیم ورک کے طور پر آن لائن فری لانسنگ میں فیوچر بنانے کا تہیہ کر کے کام شروع کیاان چاروں دوستوں نے ضروری سکل سیکھ کر عملی میدان میں قدم رکھاپروگرامنگ، گرافکس ڈیزائننگ، ویڈیو ایڈیٹنگ، ویب ڈویلپمنٹ اور ڈیجیٹل مارکیٹنگ کے ساتھ اپ ورک پر ایجنسی بنا کر کام شروع کیا۔۔۔
اچھی معیاری اور پروفیشنل سروس سےمختصر وقت میں اپنی اتنی ورتھ بنا چکے تھے کہ ایک ڈیڑھ سال کے عرصہ میں انڈیا کی دو بڑی ای کامرس کمپنیوں کے مارکیٹنگ پروجیکٹ بہت احسن انداز میں کر دئے۔۔۔
کلائنٹس کی ریکمنڈیشن اورریفرینس اس حد تک لے گئی کہ یوکے کی ایک بڑی ای کامرس کمپنی نے ان کو ہائیر کر لیا اوریوکے شفٹ کر دیا یہ اپنے چار دوستوں کی ساتھ یوکے میں اپنا بہترین سیٹ اپ بنا کر کام کر ہے ہیں اور کچھ ہی عرصہ میں تیس سے زیادہ نوجوانوں کی ٹیم کے ساتھ ٹاپ ریٹیڈ اور ہائی پئینگ کمپنی بن چکی ہے۔۔۔
ان نوجوان کی تین ، چارسالہ محنت و عظمت کی دنیا گرویدہ ہے اور ان نوجوانوں نے اس عمر میں اس نے اتنی ترقی کر لی اور وہ کر دکھایا جوہمارے ہاں اس عمر کے نوجوانوں کے وہم و گمان میں بھی نہیں۔۔۔
میں نے ذاتی طور اس کمپنی کے ٹیم لیڈر، میرے استاد و محسن راجیش کمار سیانی سے اپنی زندگی کی سب سے قیمتی چیزیں سیکھی، جنہوں نے 4،5 ماہ مجھے پرسنل وقت دیا مجھے وہ کچھ سکھا دیا کہ عمر بھر ان کے احسانات کا بدلہ نہیں چکاسکوں گا۔۔۔
انتہائی عمدہ اخلاق اور اخلاص کے پیکر اس نوجوان سے انتہاء کی عقیدت ، محبت و تعلق بن چکا ہے یہ مجھے اتنے اخلاص و لگن سے اپنا قیمتی وقت دے کر اتناکچھ سکھا چکے ہیں کہ کوئی بھاری رقم لے کر بھی اتنا کچھ نہیں سکھا سکتا اور نہ ہی اتنی سیکرٹس اور انتہائی اہم ٹپس اینڈ ٹرکس بتا دے۔۔۔
راجیش کمار کی عمر اس وقت بمشکل 23 سال ہوگی، ان کے باقی 3 ٹیم ممبرز کی عمر بھی آس پاس ہی ہے، اپ ورک اور ٹاپ ٹیل جیسی ورلڈ وائیڈ ٹاپ فری لانسنگ کمپنیز کے ہاں ان کی ہائی ریٹنگ ویلیوہے۔۔۔
ــــــــــــــــــــ
فری لانسنگ اور دوسری بڑی فیلڈز میں انڈین نوجوانوں کی ایک بڑی تعداد موجود ہے۔۔۔ اکثر بڑی فری لانسنگ ایجنسیز اور کمپنیاں انڈین نوجوانوں کی ہیں۔۔۔یوٹیوب کے میلن سبسکرائبر والے کتنے ہی چینلز انڈیا کے ہیں۔۔۔ ڈیجیٹل مارکیٹنگ کی سروسز دینے والی ورلڈ وائڈاکثر بڑی کمپنیاں انڈین نوجوانوں کی ہیں۔۔۔ آئی ٹی سے متعلق اکثریت بڑے چینلز انڈین نوجوانوں کے ہیں۔۔۔ بڑی بڑی ای کامرس کمپنیوں کو سائبر سیکورٹی اور آرٹیفیشل انٹیلجنس سیکورٹی انڈین نوجوان فراہم کر رہے ہیں۔۔۔ ٹیچنگ فیلڈ میں انڈین نوجوانوں کے نامی گرامی بیسیوں انسٹیٹیوٹ ہیں۔۔۔
انڈین گورنمنٹ میں لاکھ برائیاں سہی مگرڈیجیٹل فیلڈ میں نوجوانوں کے لئے ہرممکنہ اقدام کیا۔۔۔ نوجوانوں کو ڈیجیٹل فیلڈ میں کامیابی کے لئے حکومت نے ہر ممکن کوشش و تعاون کیا۔۔۔ وہاں نوجوانوں کی تربیت اور آن لائن فیلڈ میں مہارت و دلچسپی کسی سے ڈھکی چھی نہیں۔۔۔ انڈیا میں ٹک ٹاک اور پب جی جیسی واہیات چیزیں بین ہیں۔۔۔ نوجوانوں کو ڈیجیٹل فیلڈ میں دلچسپی اور شوق دلانے کے سینکڑوں ادارے قائم کئے ہوئے ہیں۔۔۔ وہ کمپنیاں جو یورپ امریکہ جیسے ملکوں میں اپنی سروس دینے کو ترجیح دیتی ہیں وہیں وہ سب انڈیا میں سروس دینے کو بھی اولین درجے پر سروس دینے کو ترجیح دیتی ہیں۔۔۔
اس وقت دنیا بھر میں ڈیجیٹل سکل کے حامل نوجوانوں کی جتنی مانگ ہے اتنی کسی اور چیز میں نہیں۔۔۔ ڈیجیٹل سکل کو پروفیشنل لیول پر سیکھ کر عمر بھر سوچ سےزیادہ اچھی انکم حاصل کی جاسکتی ہے۔۔۔
انڈین نوجوانوں میں ڈیجیٹل سکل کی مہارت کام میں لگن دن بدن بڑھتی جارہی ہے وہاں نوجوانوں کی ایک بڑی تعدادبہت تیزی کے ساتھ ڈیجیٹل فیلڈ کو سیکھ کر اپنا فیوچر بنا رہے ہیں۔۔۔
صرف اس بات سے اندازہ لگائیں کہ دنیا کی اکثر بڑی کمپنیوں کے بڑے اور اہم عہدوں پر انڈین نوجوان برجمان ہیں۔۔۔ خاص کر انٹرنیٹ سے وابستہ اکثر بڑی کمپنیوں میں انڈین نوجوان اپنی خدمات سرانجام دے رہے ہیں۔۔۔
آئی ٹی کی ماہرین جانتے ہیں کہ اس فیلڈ میں جتنے نوجوان کام کریں گے اور باہر سے جتنے ڈالرز اور پاؤنڈز کمائیں گے ڈائیریکٹ حکومت کو اس فائدہ پہنچے گا ۔۔۔ ملکی معیشت میں آن لائن فیلڈ سے وابستہ نوجوانوں کا بہت بڑا کردار ہوتا ہے۔۔۔
ــــــــــــــــــــ
کاش کہ پاکستانی حکومت کو بھی اس بات کی سمجھ آجائے کہ ہم آئی ٹی فیلڈ میں کتنے پیچھے ہیں۔۔۔ دنیا کی بڑی اہم اور ضروری کمپنیاں پاکستان میں اپنی سروس نہیں دے رہی ۔۔۔پاکستانی نوجوانوں کو ڈیجیٹل فیلڈ میں لانے کی کوئی خاص جدوجہد اور کام نہیں ہورہا۔۔۔
یہاں بس یہی ہورہا ہے کہ سیاست، تنظیموں، جماعتوں،پارٹی پازیوں میں اپناقیمتی وقت برباد کیا جائے۔۔۔ سینکڑوں نوجوان روزانہ صبح سے شام اور شام سے صبح تک بے کار فضول اور لایعنی قسم کے کاموں میں اپنا وقت برباد کر دیتے ہیں۔۔۔ سوشل میڈیا پر سیاسی، تنظیمی، جماعتی، پارٹی بازی اور لاحاصل بحث و مباحثہ ، مناظروں اور مباہلوں، ٹک ٹاک، گیمز اور دوسری سرگرمیاں میں میں ایک دو نہیں کتنے ہی گھنٹے ضائع کر دیتے ہیں اور پرواہ بھی نہیں ہوتی کہ ہم نے کتنا وقت بے کار ضائع کر دیا۔۔۔
حلانکہ اتنے وقت میں کتنےعمدہ اور تعمیری کام کئے جاسکتے ہیں۔۔۔ کتنی بہترین انکم حاصل کی جاسکتی ہے۔۔۔ اسی سوشل میڈیا سے کتنے فوائد حاصل کئے جاسکتے ہیں۔۔۔
اگر آپ اپنااور اپنی اولاد کا روشن اور تابناک مستقبل بنانا چاہتے ہیں تو ۔۔۔
اپنے شوق اور لگن کے مطابق اپنے اور اپنے بچوں کے لئے اسی مطابق کوئی ایک سکل سیکھنے کی پلاننگ کریں۔۔۔
اپنا ٹارگٹ سیٹ کریں۔۔۔ اپنی منزل کا تعین کریں۔۔۔اپنے مستقبل کی پلاننگ کریں۔۔۔اور اپنی قابلیت و صلاحیت کے حساب سے کسی ایک فیلڈ کا اتنخاب کریں۔۔۔
اپنے لئے ڈیجیٹل سکلز میں سے کوئی ایک سکل منتخب کریں اور اسےبھرپور وقت لگا کر پروفیشنل لیول پر سیکھ کر عملی میدان میں قدم رکھیں۔۔۔ ان شاء اللہ العزیز عمر بھر مزے کریں گے۔۔۔

Leave a Comment